بینک کے سود کا مصرف

سوال: بینک سے جو سود ملتا ہے اس کو لے سکتے ہیں یا نہیں اور اگر لے لیں تو اس کا مصرف کیا ہے

Staff April 14, 2015

جواب: سود لینا مطلقاً حرام ہے چاہے وہ بینک سے لے یا کسی او رجگہ سے قرآن پاک میں ارشاد ہے احل اللہ البیع وحرم الربوا یعنی اللہ تعالیٰ نے بیع کو حلال قرار دیا ہے اور سود کو حرام۔ نیز حدیث شریف میں آیا ہے لعن رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم اکل الربوا وموکلہ وشاھدہ وکاتبہ (مشکوٰۃ) رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے سود لینے اور دینے والے دونوں پر لعنت کی ہے اور اس کے لکھنے والے اور گواہ پر بھی لیکن بینک سے جو سود ملتا ہے اس کو لے کر بغیر نیت وثواب غریب پر تقسیم کردے کیونکہ اگر وہ سودی رقم بینک سے نہ لی جائے گی تو وہ دوسرے ناجائز کاموں میں لگائی جائے گی اور یہ اعانت علی المعصیۃ ہوگی جو ناجائز ہے۔

#1

This question is now closed