محرم الحرام کی ۹ ویں اور ۱۰ویں ذی الحجہ کو مدارس کی چھٹی

سوال: آپ کے مدرسہ میں یکم اگست کو اور گاندھی جی کی پیدائش یا وفات پر اورمحرم کی دسویںتاریخ کو چھٹی کیوںہوتی ہے اور مدرسہ کیوں بند ہوتا ہے۔
اگر یہ واقع مدرسہ بند کرنے کے لائق ہے تو خلفائے راشدین کی شہادت اور موت اور حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی وفات اور پیدائش کے موقع پر کیوں کر آپ کا مدرسہ بند نہیںہوتا جبکہ یہ بند کے زیادہ لائق ہے۔

Staff April 14, 2015

جواب: ان سوالات کے جوابات یہ ہیں کہ یکم اگست کو ہمارے مدرسہ میں چھٹی نہیں ہوتی البتہ ۱۵اگست اور گاندھی جینتی کی تاریخ ۲ اکتوبر کو تعطیل ہوتی ہے۔ اس کا مقصد گاندھی جی وغیرہ کو خلفا کے درجہ پر ماننا نہیں بلکہ سیاستاً ہندوستان کے یوم آزادی اور گاندھی جی کو ملک کا لیڈر ماننے والے قانون کی رعایت کرنا ہے تاکہ حکومت چھٹی نہ کرنے کی وجہ سے مدرسہ پر کوئی پابندی عائد نہ کردے اور کیونکہ یہ چھٹی عبادت یا دین سمجھ کر نہیں کی جاتی اور چھٹی کرنے کا مقصد اس عمل میں شرکت نہیں لہذا اس میں کوئی شرعی قباحت بھی نہیں اور محرم الحرام کی نویں ، دسویں تاریخ کی چھٹی اس وجہ سے کی جاتی ہے تاکہ طلبا اور اساتذہ ان دنوں میں روزے رکھیں، ظاہر ہے کہ روزے کی حالت میں مدرسہ آنا جانا، پڑھنا پڑھانا زیادہ مشقت کا باعث ہے اور روزے داروں پر تخفیف اور سہولت کرنے کی حدیث شریف میں ترغیب ہے ۔ اور عاشورا کے روزے کی فضیلت حدیث شریف میں وارد ہے بلکہ جب تک رمضان کے روزے فرض نہیں ہوئے تھے تو عاشورہ کا روزہ فرض تھا۔ رمضان کے روزے کی فرضیت کے بعد بھی اس کا استحباب باقی ہے نیز عاشورا کے دن اہل وعیال پر فراخی وکشادگی ضروری ہے۔ محرم کی نویں دسویںتاریخ کو چھٹی اس مقصد کے پیش نظر دی جاتی ہے اس میں بھی کوئی شرعی قباحت نہیں ہے۔ لہذا چھٹی کرنا درست ہے۔
(۳)پہلے سوال کے جواب سے دونوں چھٹیوں کے مقاصد معلوم ہوگئے تو اس کا جواب بھی سمجھ میں آجانا چاہئے لیکن اور واضح طو رپر لکھ دیتا ہوں تاکہ بزرگان دین کے ایام پیدائش اور وفات کو پیش نظر رکھتے ہوئے اور ان کو مقصد بناکر چھٹی نہیں کی گئی ہے ورنہ سب سےپہلے حضور پر پھر خلفائے راشدین پر پھر صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم اجمعین پر پھر اولیا کرام ان سے کے ایام پیدائش اور ایام وفات پر ضرور چھٹیاں کی جاتیں اور درجے بدرجہ ہر ایک بزرگ کی وجہ سے چھٹی ہوتی تو ظاہر ہے کہ پڑھائی کا دن ہی باقی نہیں رہتااور چھٹیوں میں ہی پورا سال گزرجاتا لیکن ہمارے مدرسہ میں ایسا نہیں کیا گیا جیسا کہ اوپر لکھا گیا۔

#1

This question is now closed